نگران حکومت کے لیے اپوزیشن نے نام فائنل کرنا شروع کر دیے


Mian Fayyaz Ahmed Posted on April 18, 2018

امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ نگران وزیراعظم کے لیے ہر پارٹی کی اپنی اپنی تجویزہے ۔ جماعت اسلامی نے بھی نام دیا لیکن اہم ترین ضرورت یہ ہے کہ نگران وزیراعظم غیر جانبدار ہونا چاہیے اور اس سلسلہ میں تمام سیاسی جماعتوں کو بھی اعتماد میں لینا چاہیے ۔ کرپشن کے خاتمہ کے لیے آئندہ انتخابات میں سیاسی جماعتیں کرپٹ آدمی کو ٹکٹ نہ دیں ۔ سب جانتے ہیں کہ عالمی اسٹیبلشمنٹ ملک میں اسلامی قیادت سے خوفزدہ ہے اور کرپٹ قیادت ہی اس کے اشاروں پر ناچ سکتی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوںنے منصورہ میں وفود سے ملاقاتوں کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ جماعت اسلامی افراد کی بجائے نظام کی تبدیلی پر یقین رکھتی ہے جبکہ نظام کی تبدیلی کے راستے میں سب سے بڑی رکاوٹ سیاست پر مسلط لینڈ ، ڈر گ اور شوگر مافیا ہے جو ہر قیمت پر اقتدار کو اپنی مٹھی میں رکھنا چاہتاہے ۔ یہ ٹولہ سیاست اور جمہوریت کو اپنے گھر کی لونڈی سمجھتاہے ۔ انہوں نے کہاکہ مغل شہزادوں کی حکومت میںعوام کو کبھی بھی انصاف نہیں ملے گا۔ تعلیم ، علاج ، روزگار اور امن وامان کے لیے اقتدار پر مسلط کرپٹ ٹولے سے نجات ضروری ہے ۔ انہوںنے کہاکہ ظالم جاگیرداراور کرپٹ سرمایہ دار سرمایہ لوٹنے کے بعد پارٹیاں تبدیل کر کے نئے روپ میں عوام کی گردنوں پر سوار ہو جاتے ہیں ۔ غریب اسلام آباد ، کراچی اور لاہور ، ہر جگہ مظلوم اور محکوم ہے اور اعلیٰ عدلیہ کے احکامات کے باوجود عوام کے پینے کے لیے صافی پانی تک میسر نہیں ۔ انہوںنے کہاکہ وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم علاقائیت اور لسانیت جیسے تعصبات کو فروغ دے رہی ہے ۔
سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ سپریم کورٹ اور پشاور ہائی کورٹ کے دائر ہ اختیار کی فاٹا تک توسیع بل کی منظوری کا کریڈٹ قبائلی عوام کو جاتاہے جنہوں نے ایف سی آر کے کالے قانون کے خلاف طویل جدوجہد کی ۔ قبائلی عوام کو ان کے حقوق ملیں گے تو فرعونی سیاست کا خاتمہ ہوگا ۔ سینیٹر سراج الحق نے مطالبہ کیا کہ آئندہ انتخابات میں فاٹا کے عوام کو صوبائی اسمبلی میں بھی نمائندگی دی جائے اور این ایف سی میں تین فیصد کے ساتھ ساتھ تعلیم ،روزگار اور علاج کی سہولتوں کے لیے خصوصی پیکیج دیا جائے ۔
دریں اثنا درگاہ عالیہ خواجہ احمد یار فریدی رحیم یار خان کے گدی نشین خواجہ محمود فریدالدین نے منصورہ میں سینیٹر سراج الحق سے ملاقات کی اور جماعت اسلامی کی ملک میں غلبہ دین اور کرپشن کے خاتمہ کی تحسین کی ۔ ملاقات میں پیر سید لطیف الرحمن شاہ ، پیر زادہ برہان الدین عثمانی اور ڈپٹی سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان محمد اصغر بھی موجود تھے ۔